Notification texts go here Contact Us Buy Now!

Best Of Alwida Poetry In Urdu (2023)

Kawish Poetry

alwida poetry, alwida poetry in urdu, alwida poetry for teacher, alwida poetry for students, alwida poetry sms, alwida poetry for friends in urdu, alwida poetry in sindhi, sad alwida poetry, alwida_poetry urdu, alwida_poetry in urdu sms, Dear Share on social media app Facebook Instagram Twitter and Instagram Etc.

Alwida Poetry for students

alwida poetry

Waqt e rukhsat alwida ka lafz kahny k liye
Wo tery sukhe labon ka thartharana yaad hay

وقتِ رخصت الوداع کا لفظ کہنے کیلئے
وہ تیرے سوکھے لبوں کا تھرتھرانا یاد ھے

Sar zameen e ishq par
rahton ko alwida

سر زمینِ عشق پر
راحتوں کو الودع

Kalejja rah gaya us waqt phat kr
Kaha jab alwida usne palat kr

کلیجہ رہ گیا اس وقت پھٹ کر
کہا جب الوداع اس نے پلٹ کر

Na awaaz dena na palat kar wapas dekhna
Badi mushkil se sikha hai kisi ko alvida kehna

نہ آواز دینا نہ پلٹ کر واپس دیکھنا
بڑی مشکل سے سیکھا ھے کسی کو الودع کہنا

Alwida Poetry for friends

Wo is tarah howa mujhse judaa use alvida bhi na keh saka
Uski parwaz mein itna fareb tha use bewafa bhi na keh saka

وہ اس طرح ھوا مجھ سے جدا اسے الوداع بھی نہ کہہ سکا
اس کی پرواز میں اتنا فریب تھا اسے بے وفا بھی نہ کہہ سکا

Wo alwida ka manzar wo bheegti palken
Pas e ghubaar bhi kiya kiya dekhai deta hy

وہ الوِداع کا منظر وہ بھیگتی پلکیں
پسِ غبار بھی کیا کیا دکھائی دیتا ھے

Ghar me rha tha kaun ki rukhsat kary hamen
Chaukhat ko alwida kaha aur chal pade

گھر میں رھا تھا کون کہ رخصت کرے ہمیں
چوکھٹ کو الوداع کہا اور چل پڑے

Umar bhar ka saath mitti me mila
Ham chaly aay jism e be jaan alwida

عمر بھر کا ساتھ مٹی میں ملا
ھم چلے اے جسمِ بے جاں الوداع


 • Raat Poetry


Laga jab yuun k uktany laga hay dil ujalon se
Use mahfil se uski alvida kah kr nikal aay

لگا جب یوں کہ اُکتانے لگا ھے دل اُجالوں سے
اسے محفل سے اس کی الوداع کہہ کر نکل آئے

Alvida poetry in Urdu for lovers

Sochta Hoon ke woh kitne masoom they
Kya se Kya ho Gaye dekhte dekhte
Woh Jo kahate the bichdenge na ham kabhi
Alvida ho Gaye dekhte dekhte
Aate jaate the Jo sans bankar kabhi
Woh Hawa ho Gaye dekhte dekhte
Sochta Hun Ki woh kitne masoom they
Kya se Kya ho Gaye dekhte dekhte

سوچتا ھوں کہ وہ کتنے معصوم تھے
کیا سے کیا ھو گئے دیکھتے دیکھتے
وہ جو کہتے تھے بچھڑیں گے نہ ھم کبھی
الوداع ھو گئے دیکھتے دیکھتے
آتے جاتے تھے جو سانس بنکر کبھی
وہ ھوا ھو گئے دیکھتے دیکھتے
سوچتا ھوں کہ وہ کتنے معصوم تھے
کیا سے کیا ھو گئے دیکھتے دیکھتے

..